اظہار یکجہتی- مختصر مختصر

تحریر: عماد ظفر

بیگم نے پوچھا کہاں جا رہے ہو۔ اس نے جواب دیا کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کا دن ہے ایک ریلی میں شریک ہونا ہے اور خطاب کرنا ہے۔ لیکن تمہاری تقریر سے کشمیریوں کے دکھوں کا مداوا کیسے ہو گا۔ وہ بولا تکلیف اور دکھ کی گھڑی میں چند مثبت الفاظ بھی کشمیریوں کی ہمت و حوصلہ بڑھانے کیلئے کافی ہیں۔ بیگم نے بار سننے کے بعد کہا کہ سنیئے ساتھ والوں کا بچہ بہت بیمار ہے وقت ملے تو مزاج پرسی کر آئیے گا۔ وہ تلملایا اور بیزاری سے کہتے ہوئے اٹھا۔ میرے جانے سے یا چند الفاظ میں حال دریافت کرنے سے کیا ہو گا۔ ساتھ والوں سے کہو کہ اسے کسی اچھے ڈاکٹر کے پاس لے جائیں تا کہ بیماری کا علاج ممکن ہو سکے۔