مومن مومن، کافر کافر

سائرہ امبرین

gulshan

میں مومن، تو کافر ہے
ہاں صحیح کہا، تو کافر ہے
مار کے اس کو اے لوگو!
تم پار لگو، غازی کہلاؤ
کیا بولے؟ میں ماروں؟
میں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کیوں ماروں؟
میرا کام تو بات پھیلانا
پھر بے سدھ ہو کر سو جانا
اب صبح اٹھوں گا
پھر دیکھوں گا
کتنے مومن، کتنے کافر؟
کس نے کس کو مارا ہے؟
سارا کام یہ میرا ہے
دیکھو نا!
گر میں ماروں گا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
باقی کام یہ کون کرے گا؟
اتنے فتوے رہتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔
کب بانٹوں گا؟
یاد آیا!!!
کل اک فتوہ میں اور بھی دوں گا
میں بولوں گا۔۔۔۔۔۔۔
اے لوگو!!! بخشوا لو اپنے سارے بار
فلاں فلاں کو لگا دو پار
کیا بولے؟ ریفرنس دوں؟
ارے فتوے کا کیا ریفرنس؟
اسلام کے نام پہ بولا ہے۔
کیا غلط کہوں گا؟
پرے ہٹو!!!!
وقت نہیں دلیل کی خاطر
نہ ہی ہے تحقیق کی خاطر
ہے تو بس تقلید کی خاطر
اتنی بات بتانی تھی کہ
میں مومن، تو کافر ہے
جو جو میری بات یہ مانے
وہ مومن ہے
جو نہ مانے وہ ہے کافر
اچھا کھیل ہے، تم بھی کھیلو
مومن مومن، کافر کافر